Live TV

ہالینڈ کے معروف شاعر خواجہ احسان سہگل کے ساتھیوں نے احسان سہگل کے نام سے ایک پروگرام کا انتظام و انصرام کیا

Program With Ehsan Sehgal

Program With Ehsan Sehgal

ہالینڈ (حاجی جاوید عظیمی) گزشتہ دنوں ہالینڈ کے معروف شاعر خواجہ احسان سہگل کے ساتھیوں نے ایک شام احسان سہگل کے نام سے ایک پروگرام کا انتظام و انصرام کیا۔ اس علمی و ادبی پروگرام کا آغاز صوفی محمد شفیق چیمہ نے تلاوت قرآن پاک سے کیا اور تقریب کی نظامت کرتے ہوئے معزز مہمانوں کے لئے استقبالیہ کلمات بھی ادا کئے۔ پروگرام کی صدارت نگران مراقبہ ہال ہالینڈ حاجی محمد جاویدعظیمی نے کی جبکہ مہمانان خصوصی روزنامہ دھرتی کے روح رواں اے۔وسیم اور علمی ادبی شخصیت نعیم عارف تھے۔

صدر محفل حاجی جاوید عظیمی نے شاعری پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انسان کا دماغ اطلاعات وصول کرتا ہے پھر یہ اطلاعات خیالات میں منتقل ہو جاتی ہیںاور پھر خیالات سے الفاظ وجود میں آتے ہیں لفظوں کو یکساں اوزان کے ساتھ ترتیب دینے والا ماہر انسان شاعر کہلاتا ہے۔ شاعر احسان سہگل اور انکے دیوان ضرب سخن سے متعلق اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے حاجی جاویدعظیمی نے کچھ یوں کہا احسان سہگل نے شاعری کی مختلف اصناف گیت، غزل، خمسہ، حمد ، نعت اور منقبت پر طبع آزمائی کی ہے بالخصوص ان کادیوان ضرب سخن علم ادب کی دنیا میں ایک خوبصورت اضافہ ہے ۔

انہوں نے جو بھی کلام تحریر کیا اسکے نیچے کلام کی بحر اور تقطعی بھی تحریر کی ہے اس عمل کو میں سند بنا کر برملا کہتا ہوں کہ احسان سہگل صاحب ایک مستند شاعر ہیں اساتذہ کی فہرست میں آپ خاص مقام کے حامل ہیں۔حاجی جاوید عظیمی نے احسان سہگل کی علمی و ادبی خدمات کے صلے میںمراقبہ ہال ہالینڈ کی جانب سے حسن کارکردگی کا ایوارڈ بھی نذر کیا۔بعدازاں جرمنی سے آئے ہوئے مہمان معروف قوال محمود صابری نے شاعر موصوف کے دیوان ضرب سخن سے حمد،نعت اورمنتخب کلام پیش کرکے شرکاء تقریب سے خوب داد وصول کی۔ پروگرام کے دوسرے حصے میں ہالینڈ کے مایہ ناز گلوکار شہزاد علی خان نے ضرب سخن سے ہی سخنوروں پر اپنے دلنشین انداز میں سُریلی ضربیں بھی لگائیں۔آخر میں اس ادبی اور علمی تقریب کے میزبان اول شاعر احسان سہگل نے شرکائے تقریب کا ان کی آمدپر صمیم قلب سے شکریہ ادا کیا۔